ملک نیچے جا رہا ہے ، مان لینا چاہیے کہ ہم دیوالیہ ہو چکے ہیں، شبر زیدی

لاہور ( وی او پی نیوز ) سابق چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) شبر زیدی نے لاہور میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے وہ باتیں کہہ ڈالیں ہیں جو انتہائی غور طلب اور لمحہ فکریہ ہیں . شبر زیدی کہتے ہیں کہ ہمیں مان لینا چاہیے کہ ہم دیوالیہ ہو چکے ہیں۔ عمران خان، شہباز شریف، مفتاح اسماعیل سچ نہیں بولتے۔پاکستان کی دکان اس طرح نہیں چل سکتی،

ملک نیچے جارہا ہے۔ یہ کہنا درست نہیں کہ ہم دیوالیہ نہیں ہیں، ہم ہر سال منفی سے آغاز لیتے ہیں۔ ہمارا پہلا پرابلم یہ ہے کہ ہم سچ نہیں بولتے۔ میں اکاؤنٹنٹ ہوں مجھے نہیں لگتا کیسے بچیں گے۔ ہمارا جی ڈی پی 375 ارب ڈالر ہے، ٹیکس اکٹھا کرنے کی شرح 10 فیصد ہے۔ شبر زیدی نے پڑوسی ملک کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ مودی نے 3 سال میں ساڑھے 3 کروڑ ٹیکس فائلرز شامل کیے۔ میں آخری آدمی تھا جس نے عمران خان کو کہا آئی ایم ایف کے پاس جانا ہوگا۔ میرے مطابق سی پیک کا منصوبہ قابل عمل نہیں ہے، پیسہ کہاں سے آئے گا، کیسے آئے گا، کچھ معلوم نہیں۔ہماری ٹیکس کلیکشن کا 60 فیصد 400 ٹیکس پیئر دیتے ہیں۔ مجھے عمران خان، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور آئی ایم ایف کی مکمل سپورٹ تھی، میں ایف بی آر کا مضبوط چیئرمین تھا لیکن 8 ماہ کے بعد فیصلہ کیا کہ کام نہیں کر سکتا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *